Published 8 months ago in Sufi Kalam

Ehsan Danish - Magar Khudai Ki Qasim Khab Hai Dunya Sufi Kalam

  • 218
  • 0
  • 0
  • 4
  • 0
  • 0

Magar Khudai Ki Qasim Khab Hai Dunya Sufi kalam is a kalam of Ehsan Danish. He born was born in 1914Kandhla, India. Ehsan Danish was a prominent Urdu poet and also write sufiana kalams. His poetry motivates the common people's feelings and he has been compared with Josh Malihabadi.

Lyrics

اگرچہ خلدِ بریں کا جواب ہے دنیا
مگر خدا کی قسم ایک خواب ہے دنیا

لرز رہی ہے فضا میں صدائے غم پرور
ترنماتِ فنا کا رباب ہے دنیا

مگر خدا کی قسم ایک خواب ہے دنیا

جہاں کی عشرتِ فانی پہ اعتبار نہ کر
شبِ بہار کا مستانہ خواب ہے دنیا

سحر پیامِ تبسم ہے ، شام اذنِ سکوت
شگوفہ زار کا فانی شباب ہے دنیا

مگر خدا کی قسم ایک خواب ہے دنیا

یہاں کی شام ہے اک پردۂ سیہ کاری
شرابِ عیش کے پیاسو! سراب ہے دنیا

مگر خدا کی قسم ایک خواب ہے دنیا

قدم قدم پہ طلسماتِ نور و ظلمت ہیں
فریب خانۂ شیب و شباب ہے دنیا

مگر خدا کی قسم ایک خواب ہے دنیا

شکستِ دل کی حکایات حسرتوں کے بیاں
فسانہ ہائے الم کی کتاب ہے دنیا

مگر خدا کی قسم ایک خواب ہے دنیا

جھکا نہ خاک درِ حسن پر جبینِ امید
سنبھل سنبھل کہ یہاں بے حجاب ہے دنیا

مگر خدا کی قسم ایک خواب ہے دنیا

ہجومِ درد کی ، انبوہِ آرزو کی قسم
تواترِ ستمِ بے حساب ہے دنیا

مگر خدا کی قسم ایک خواب ہے دنیا

رہِ خلوص میں احسان اس سے بچ کر چل
کہ ایک خضرِ ضلالت مآب ہے دنیا

احسان دانش

:
/ :

Queue

Clear