Published 2 years ago in Sufi Kalam

Humne Tujhe Jana Hai

  • 362
  • 0
  • 0
  • 5
  • 0
  • 0

Kalam Name : Humne Tujhe Jana Hai
Singer : Sami Kanwal
Lyrics : Atheeq Ahmed Jazib
Composition : Fsee Production
Kalam On : Fsee Production
LABEL : Fsee Production
Producer(FP): Faisal Ashraf Ch
Production : Fsee Production

Lyrics

ہم نے تجھے جانا ہے فقط تیری عطا سے
سورج کے اجالوں سے فضاؤں سے خلا سے
چاند اور ستاروں کی چمک اور ضیا سے
جنگل کی خموشی سے پہاڑوں کی انا سے
پرہول سمندر سے ، پراسرار گھٹا سے
بجلی کے چمکنے سے کڑکنے کی صدا سے
مٹی کے خزانوں سے اناجوں سے، غذا سے
برسات سے، طوفان سے، پانی سے، ہوا سے
ہم نے تجھے جانا ہے فقط تیری عطا سے

Suraj ke ujalon se fazaaon se khala se
chaand or sitaron ki chamak aur zia se
From the sun's light to the atmosphere open
By the brightness of the moon and stars and zia

jangel ki khamoshi se paharon ki aana se
har hol samundar se pursarar ghatao se
Silence of the forest to the ego of the mountains
Every hole from the ocean to the subdued

bijale ke chamankne se carakne ki seda se
metei ke khazanun se anu-junn se ghazaa se
From the flash of lightning to the sound of the thunder
From soil treasures to grains to food

bersat se tufanon se pani se hawa se
humne tujhe jana hai faqat teri itaa se
From rain to storms to water to air
We need to know you only from your legacy

گلشن کی بہاروں سے، تو کلیوں کی حیا سے
معصوم سی روتی ہوئی شبنم کی ادا سے
لہراتی ہوئی باد سحر، باد صبا سے
ہر رنگ کے ہر شان کے پھولوں کی قبا سے
چڑیوں کے چہکنے سے تو بلبل کی نوا سے
موتی کی نزاکت سے تو ہیرے کی جلا سے
ہر شے کے جھلکتے ہوئے فن اور کلا سے
ہم نے تجھے جانا ہے فقط تیری عطا سے

Gulshan ki baharon se tu kaliyaon ki Haaya se
masom si rotai hoi shabnam ki aada se
From the spring of Gulshan the bottom of the buds
Innocent crying from the dew

larati hoi bade seher bade saba se
har rang ke har shan ke phoolon ki qaba se
Waving windmill from morning breeze
Of every color of every splendor from the flower plant

chireaon ke chamakne se tu bulbal ki nawa se
moti ki nazaqat se tu hiron ki jala se
Sparkle of sparrows from the sweet voice of the bubble
From the fragrance of pearls to the burning of everyone


har shae ke chamakte hoe fen aur kela se
humne tujhe jana hai faqat teri itaa se
Everything from the glowing art and the skill
We need to know you only from your legacy
ہم نے تجھے جانا ہے فقط تیری عطا سے



دنیا کے حوادث سے ، وفاؤں سے، جفا سے
رنج و غم و آلام سے، دردوں سے، دوا سے
خوشیوں سے، تبسم سے، مریضوں کی شفا سے
بچوں کی شرارت سے تو ماؤں کی دعا سے
نیکی سے، عبادات سے، لغزش سے، خطا سے
خود اپنے ہی سینے کے دھڑکنے کی صدا سے
رحمت تیری ہر گام پہ دیتی ہے دلاسے

ہم نے تجھے جانا ہے فقط تیری عطا سے

ابلیس کے فتنوں سے تو آدم کی خطا سے
اوصاف براہیم سے، یوسف کی حیا سے
اور حضرت ایوب کی تسلیم و رضا سے
عیسیٰ کی مسیحائی سے، موسیٰ کے عصا سے
نمرود کے، فرعون کے انجام فنا سے
کعبہ کے تقدس سے تو مرویٰ و صفا سے
تورات سے، انجیل سے، قرآں کی صدا سے
یٰسین سے، طٰہٰ سے، مزمل سے ، نبا سے
اک نور جو نکلا تھا کبھی غار حرا سے
ہم نے تجھے جانا ہے فقط تیری عطا سے

iblis ke fitnon se tu adam ki khita se
Aosaf ibrahim se yusuf ki haaya se
From the evil of the devil of Adam's mistake
Attributes from Abraham and Yusuf modesty

or hazart aayub ki taslem-e-raza se
Isa ki mesihai se, musaa ke esa se
And with the acknowledgment of Hazrat aayub
From the Christian of Jesus the rod of Musa


namrud ke firaoun ke injam fana se
kaba ke taqadas se tu mervi safa se
the end of namrud and firaoun
By the sanctity of the Ka'bah from mervi safa


turaat se injel se Quran ki sada se
Yasen se Taha se Muzamil se Niba se
From the voice of Turaat, injel and Qur'an
From the Yasen, Taha, Muzamil and Niba


Ek noor ju nikla tha kabi Ghar-e-Hira se
humne tujhe jana hai faqat teri itaa se
A light that ever came out of the Ghar-e-Hira cave
We need to know you only from your legacy

:
/ :

Queue

Clear